حرم علوی کی لائبریری

حرم امیرالمومنین ؑ کی لائبریری نجف اشرف میں موجود تمام لائبریریوں سے ممتاز اور جدید ترین لائبریری شمار ہوتی ہے۔ گذشتہ دور میں بہت ساری کتابیں اور خطی نسخے جو مؤلفین کے اپنے ہاتھوں کے لکھے ہوئے تھے اس لائبریری کا حصہ بنے ہیں۔ اس لائبریری کی شھرت کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ بادشاہوں نے اپنے اپنے زمانے میں قیمتی ترین خطی نسخے ھدیہ کر کے اس لائبریری کو کافی اھمیت دی جسکی وجہ سے لائبریری کی شھرت اور مقام میں اضافہ ہوا ہے۔اور اس کے ساتھ ساتھ علماء کرام، کاتبین حضرات اور مختلف شخصیات نے اس لائبریری کو کافی اھمیت دی۔ انھوں نے پوری کی پوری لائبریریز خرید کر اس لائبریری کو تیار کیا اور
اپنی لائبریریاں ھدیہ کیں یا امیرالمومنین ؑ کی کرامت کی وجہ سے اپنی کتابیں اس لائبریری کے لیے وقف کر دیں۔
تاریخ میں اس لائبریری کے مختلف نام ہیں:

(۱)غروی خزانہ.یہ نام لوگوں میں کافی مقبول اور مشھور ہے

(۲)علوی خزانہ

(۳)صحن کا خزانہ

(۴)امیرالمومنین ؑ کا خزانہ

(۵)صحن علوی کی لائبریری

(۶)علوی لائبریری

(۷)حیدری لائبریری اور آج کل اسے روضہ حیدری کی لائبریری کا نام دیا گیا ہے۔